Comments
  1. بہت مزا آ رہا ھے اگر یہ بے گناہ ھے تو ماڈل ٹاون میں مودی نے قتل عام کروایا
    جو کرنا ھے کر لو نواز کی گرفتاری پر احتجاج نہیں ھوا تو اب اس باندر کی گرفتاری پر ہو گا

  2. ایسے لوگ ایسے حالات سے بڑے فائدے حاصل کرتے ہیں کہ پہلے تو ہم پہ کوئی ہاتھ نہیں ڈالے گا اور اگر پکڑے بھی گئے تو سیاسی پارہ انتہائی گرم ہے سیاسی قیدی بن جائیں گے وہی رانا صاحب نے کیا۔

  3. بچپن میں ایک کہانی سنا کرتے تھے ایک دیہاتی پیر نے اپنی سواری کے لئے رکھی گئی گھوڑی کے ساتھ نفسانی خواہش پوری کر لی بعد میں عقل آئی تو پچھتاوا ہوا کہ یہ میں نے کیا کر دیا۔اگر اس کو حمل ٹھہر گیا اور اسنے انسان کو جنم دے دیا تو لوگ کیا کہیں گے ۔اس خوف سے وہ پیر صاحب جہاں بھی اپنے مریدوں کے پاس جاتے تو وہاں یہ کہتے سنے جاتے کہ میری گھوڑی کبھی کبھی انسان بھی جمتی ہے۔بلکل چھ ماہ سے رانا ثنا صاحب کا بھی اسی پیر والا ہی حال رہا ہے۔آخر پکڑے گئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *